Browsing Category

Rauf Klasra

Find here Urdu Columns of Rauf Klasra published in Dunya News and Akhbar e Jehan

رنگیلا کی سیاسی فلم کا سین – روف کلاسرا

سوموار کے روز قومی اسمبلی کی پریس گیلری کا چکر لگانے کا سوچا۔ بجٹ سیشن غور سے دیکھنے اور سننے کا من چاہا۔ سوچا حکومت اور اپوزیشن کا بجٹ پر جو میچ پڑے گا اس کو براہ راست دیکھنے کا موقع ضائع نہیں کرنا چاہئے۔ ابھی پوری طرح سیشن شروع بھی نہیں…

اب کسی کو شرم نہیں آتی! – روف کلاسرا

شہر میں اپنے دو تین ٹھکانے ہیں جہاں کبھی کبھار چکر لگ جاتا ہے۔ ان میں سے ایک بڑا ٹھکانہ کہیں یا ڈیرہ میجر عامر کا گھر ہے‘ کچھ سیاست کی خیر خبر جہاں مل جاتی ہے اور ماضی کے راز نکلوانے میں بھی کبھی کامیابی مل جاتی ہے۔ میجر عامر کے پاس…

حکمرانوں اور بابوز کی آسکر ایوارڈ اداکاری – روف کلاسرا

یہ بات طے ہے‘ جھوٹ بولے بغیر کوئی حکومت چلتی ہے‘ نہ ہی لوگ خوش ہوتے ہیں۔ اسلام آباد میں رپورٹنگ کرتے تئیس برس گزر گئے اور اب تک کئی وزرائے اعظم آتے جاتے دیکھ چکا ہوں‘ لیکن دل میں حسرت ہی رہی کہ کوئی تو اس ملک کے عوام کے ساتھ سچ بول کر…

سب ڈرامے ہیں! – روف کلاسرا

آپ کو کیا لگتا ہے قومی اسمبلی میں ٹرین حادثے پر جو ممبر تقریریں کررہے تھے وہ واقعی دل سے افسردہ تھے کہ پچاس سے زائد انسانی جانیں چلی گئیں؟آپ کو کسی کی آواز یا گفتگو سے لگا کہ وہ واقعی اس جانی نقصان پر افسردہ تھا؟ کوئی بھی حادثہ جب…

نورالہدیٰ شاہ کا جنگل – روف کلاسرا

سندھی ڈرامہ نگار نورالہدیٰ شاہ کا نام پہلی دفعہ گائوں میں ٹی وی سکرین پر 1985 میں سنا اور پڑھا تھا اور ان سے ملاقات پینتیس برس بعد 31 مئی کو ہمارے دوست اور دانشور پروفیسر فتح ملک کے ہونہار صاحبزادے طاہر ملک کے گھر ڈنر پر ہوئی۔ پروفیسر…

ہم سب بابو بننا چاہتے ہیں – روف کلاسرا

بیوروکریسی کے زوال پر میرے پچھلے کالم پر بہت بحث ہوئی۔ بہت سے خوش تو کئی ناخوش۔ ایک اہم سوال جو اُٹھا یہ تھا:سب کیوں بیوروکریٹ بننا چاہتے ہیں یا اپنے بچوں کو کیوں بنانا چاہتے ہیں؟ کیا ہمارے اندر یہ جذبہ ہے کہ وہ ملک و قوم کو سرو کریں گے‘…

زنجیر سے لٹکنا ہو گا… – روف کلاسرا

پاکستانی بیوروکریسی اور پولیس کا زوال دیکھنا ہو تو وزیراعظم عمران خان کے عوام کے ساتھ لائیو کالز سیشن میں کوئٹہ سے خاتون عائشہ مظہر کی فون کال کافی ہے۔ کال کے بارہ گھنٹوں کے اندر خاتون کا مسئلہ حل کرنے کیلئے جو پھرتیاں پنجاب پولیس نے…